صلوۃ الحاجت پڑھنےکےفائدے

محترم اقوان.. میرا سوال ہے کہ، صلوۃ حاجت (حاجت کی نماز) کا مکمل طریقہ جو قرآن و احادیث صحیہ ثابت ہو، بتایں. کیوں کہ میں نے اس سے مطالق کئی باتیں سونی ہیں. جیسے کہ،پہلی رکعت میں سورۃ فاتحہ کے بعد فلاں سورۃ سو ١٠٠ دفعہ، اور دوسری رکعت میں سورۃ فاتحہ کے بعد فلاں سورۃ سو ١٠٠ دفعہ وغیرہ وغیرہ…..صلاۃ حاجت سے متعلق کوئی متعین روایت ثابت نہیں ہے بلکہ موضوع اور ضعیف روایات میں اس کی فضیلت بیان ہوئی لہذا اس کا کوئی خاص طریقہ مشروع نہیں ہے۔ البتہ اگر کسی کو کوئی حاجت پیش آئے تو دو رکعت نفل نماز پڑھ کر دعا مانگنا جائز ہے۔

اور اس نفل نماز کا کوئی خاص طریقہ مشروع نہیں ہے۔ ارشاد باری تعالی ہے: يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا اسْتَعِينُوا بِالصَّبْرِ‌ وَالصَّلَاةِ ۚ إِنَّ اللَّـهَ مَعَ الصَّابِرِ‌ينَ ﴿١٥٣﴾ اے ایمان والو صبر اور نماز سے مدد لیا کرو بےشک خدا صبر کرنے والوں کے ساتھ ہے۔ صلاۃ حاجت کے مروجہ طریقوں کا رد کرتے ہوئے شیخ صالح المنجد لکھتے ہیں:نمازِ حاجت كا ذكر چار احادیث میں ملتا ہے، جن میں سے دو احادیث تو موضوع اور من گھڑت ہیں۔ اور ان دو حدیثوں میں سے ایك میں بارہ اور دوسرى حدیث میں دو ركعت كا ذكر ملتا ہے، اور تیسرى حدیث بھى بہت زیادہ ضعیف ہے۔

اور چوتھى حدیث بھى ضعیف ہے اور ان دونوں حدیثوں میں دو ركعت كا ذكر ہوا ہے۔ ان چار احادیث میں دو تو سرے سے موضوع ، منگھڑت ہیں ،اسلئے ان کا ذکر ہی نہیں کرتے ، تیسری اور چوتھی جو ضعیف ہیں وہ درج ذیل ہیں ؛ سیدنا عبد اللّٰہ بن ابواوفى بیان كرتے ہیں كہ رسولِ كریم ﷺ نے فرمایا: ”جس كسى كو بھى اللّٰہ سبحانہ و تعالىٰ كى جانب یا پھر كسى بنى آدم كى طرف كوئى حاجت ہو تو وہ اچھى طرح وضوكرے اور دو ركعت ادا كر كے اللّٰہ كى حمد و ثنا بیان كر كے نبى ﷺ پر درود پڑھے اور پھر یہ كلمات كہے: لاَ إِلَهَ إِلاَّ الله الْحَلِیمُ الْكَرِیمُ سُبْحَانَ الله رَبِّ الْعَرْشِ الْعَظِیمِ الْحَمْدُ لله رَبِّ الْعَالَمِینَ أَسْأَلُكَ مُوجِبَاتِ رَحْمَتِكَ وَعَزَائِمَ مَغْفِرَتِكَ وَالْغَنِیمَةَ مِنْ كُلِّ بِرٍّ وَالسَّلاَمَةَ مِنْ كُلِّ إِثْمٍ لاَ تَدَعْ لِى ذَنْبًا إِلاَّ غَفَرْتَهُ وَلاَ هَمًّا إِلاَّ فَرَّجْتَهُ وَلاَ حَاجَةً هِىَ لَكَ رِضًا إِلاَّ قَضَیتَهَا یا أَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ ‘‘

(جامع ترمذى :479قال الالباني: ضعيف جدا ؛ سنن ابن ماجہ :1384 ”اللّٰہ حلیم و كریم كے علاوہ كوئى معبود برحق نہیں، اللّٰہ پاک ہےجوعرش عظیم كا پروردگارہے، سب تعریفات و حمد اللّٰہ رب العالمین كے لیے ہیں، اے اللّٰہ میں تجھ سے تیرى رحمت واجب کرنے والے اُمور طلب كرتا ہوں، اور تیری بخشش كا طلبگار ہوں، اور ہر نیكى كى غنیمت چاہتا ہوں، اور ہر گناہ سے سلامتى طلب كرتا ہوں، میرے سب گناہ معاف كر دے، اور میرے سارے غم و پریشانیاں دور فرما، اور تیرى رضا وخوشنودى كا ،جو بھى حاجت و ضرورت ہے ،وہ پورى فرما اے ارحم الراحمین!”

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.