چاند گرہن ، وقت اور اثرات؟ ایک عمل ضرور کریں! کیا قیامت کی نشانی ہے؟

چاند گرہن ، جو کہ ہر سال لگتا ہے اس کا ایسا عمل ہے کہ جس کے کرنے سے آپ کو وہ سب ملے گا جس کی آپ برسوں سے خواہش رکھتے ہو اس دن یہ لوگوں نظر ، لوگوں کے نظریے کے مطابق یہ چیز ظاہر ہو رہی ہے کہ یہ قیامت کی نشانیاں ہیں ۔ یا کوئی بھی ایسا مسئلہ ہے آپ کے لیے ایک ایسا عمل ہے جس سے آپ کی تمام پریشا نیا ں ختم ہو جائیں گی۔ آج وظیفہ یو ں ہے۔

قرآن پاک میں یہ چیز بہت واضح بیان کی گئی ہےکہ چاند گرہن ہو سورج گرہن ہو اس سے کسی کو گھن نہیں لگتا ، اس سے کوئی بیماری نہیں لگتی ۔ اس سے کوئی مصیبت نہیں آتی ہے بلکہ یہ اللہ پاک کی نشانیوں میں سے ایک نشانی ہے۔ تاکہ وہ اپنے بندوں میں سے اپناہونا ظاہر فرمادے۔ اور اپنی نشانیاں دکھا سکے۔ تو چاند گرہن اور سورج گرہن اللہ کی نشانیوں میں سے ہے۔ یہ با ت واضح ہےکہ جب قیامت لگ جائے گی تو چاند کو گرہن لگ جائے گا اور سو رج کو گرہن لگ جائے گا۔ تو یہ قیامت کی نشانیوں میں سے بھی ہو سکتا ہے جیسا کہ لوگ گناہوں میں ملوث ہیں۔ آج کل کیا کچھ نہیں ہورہاہے۔

جیسا کہ بیماریا ں بڑھتی جارہی ہیں۔ اور کرونا وائرس جیسا کہ ہم میں بڑھتا جا رہا ہے۔ اور بیماریاں اور ان کی وجہ سے لوگ اموات کا شکا ر ہور ہے ہیں ۔اور یہ تمام چیزیں ایسی ہیں جو انسان کو پر یشانیوں میں مبتلا کر دیتی ہیں ۔اس کے بارے میں خواتین کہتی ہیں جب چاند گرہن لگتا ہے۔ یا سورج گرہن لگے تو حاملے خواتین کو بہت احتیاط کی ضرروت ہوتی ہے جب حدیث پا ک میں یہ بات واضح ہوچکی ہے کہ چاند گرہن اور سورج گرہن سے کسی کو کوئی مصیبت یا آفت نہیں پہنچتی ہے۔ لیکن جو حاملہ خواتین ہیں وہ ” یا اللہ ، یا رحمن” کا ورد کرتی رہیں ۔ اور کثرت سے درود پاک پڑھتی رہیں۔ اس کے علاوہ چاند اور سورج گرہن کی نمازیں ہوتی ہیں ۔ وہ ضرور ادا کریں۔ چاند گرہن کی نماز کی دو رکعتیں ہوتی ہیں۔ یہ ضرور آپ نے ادا کرنی ہیں ۔ ہے۔ اس کو ادا کرنے کے بعدیہ ورد “یا اللہ ، یارحمن” پڑھنا ہے۔ انشاءاللہ ! اللہ تعالیٰ رحم فرمائے گا۔ آپ کی حاجتیں اورمرادیں پوری ہوں گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.