کیا انبیاء اپنی قبروں میں زندہ ہوتے ہیں؟

ابن کثیرؒ بہت بڑے آدمی ہیں بھاری آدمی ہیں علم کی دنیا میں انہوں نے ایک واقعہ نقل کیا ہے علامہ عطبیؒ قبر پر بیٹھے تھے یہ پہلی صدی کا ہی واقعہ لگتا ہے کہ کوئی روک رکاوٹ نہیں تھی اور کچھ پڑھ رہے تھے تو ایک بدو آیا اس نے اپنی اونٹنی کو باہر کھڑا کیا اور آکر اندر سلام پیش کیا السلام علیک یارسول اللہ صحیح حدیث ہے کہ انبیاء اپنی قبور

میں زندہ ہوتے ہیں اور ان پر موت آتی ہے موت ہر نبی رسول پر آتی ہے موت سے پاک صرف اللہ ہے پھر اللہ ان کو زندگی دے دیتا ہے جسم کے ساتھ ہی کچھ علماء فرماتے ہیں کہ برزخی زندگی ہوتی ہے لیکن جو جمہور اہل السنت والجماعت جس جس مذہب و عقیدے پر ہیں کہ انبیاء اپنی قبور میں زندہ ہوتے ہیں تو آکر سلام پیش کیا اور کہنے لگا یا رسول اللہ ﷺ آپ کے رب کہتے ہیں

ولو انہم اذ ظلمو انفسہم جاؤک اگر یہ گناہ کر کے آپ کے پاس آجائیں فاستغفراللہ اور معافی مانگیں اللہ سے واستغفرلہم الرسول اور آپ بھی پھر اللہ سے ہمارے لئے معافی مانگیں تو اللہ معاف کرتا ہے تو میں آپ کے پاس اپنے گناہوں کا بوجھ لے کر آیا ہوں اور آپ کو سفارشی بناتا ہوں اللہ کی بارگاہ میں کہ اللہ مجھے معاف کردے اور پھر اس نے چار شعر پڑھے دو شعر ابھی روضہ مبارک کے جو دوپلر ہیں ان پر لکھے ہوئے ہیں دو کتاب میں بھی لکھے ہوئے ہیں اے وہ بابرکت ذات جو زمین کے اندر گئے تو زمین کا اندر بھی پاک ہوگیا اور اوپر بھی پاک ہوگیا اندر بھی خوشبودار اور باہر بھی خوشبو دار میری جان اس قبر پر قربان جس میں آپ آرام فرمارہے ہیں آپ کے ساتھ آپ کی سخاوت بھی ہے آپ کی دریا دلی بھی ہے آپ کی فیاضی بھی ہے یہ دو شعر ہیں اگلے دو ہیں

آپ ہی وہ شفیع مذنبین ہیں کہ پل صراط پار ہوگا آپ کی سفارش اور شفاعت سے عملوں سے نہیں آپ کی شفاعت سے پل صراط پار ہوگا اور میں آپ کے دونوں ساتھی ابو بکر و عمر کو بھی کبھی نہیں بھول سکتا کیا شعر کہہ گیا اور کیا بات کر گیا یارسول اللہ قیامت تک جب تک قلم چلتے رہیں میرا سلام آپ تینوں کو پہنچتارہے قلم تو کبھی رکتا نہیں اور آج کل قلم بہت زیادہ چل رہا ہے کمپیوٹر کتنا بڑا قلم وجود میں آچکا ہے تو کیا بات کرگیا عرب کی فصاحت پر قربان جائیے ایران کے بادشاہ نے کہا تھا کہ عربوں میں کیاخصوصیت ہے تو امیہ بن ابی سلط تو اس نے کہا میرا سلام پہنچے آپ تینوں کو جب تک قلم چلتارہے اور پھر وہ روتا ہوا باہر نکل گیا علامہ عطبی کو ایک دم نیند آگئی بیٹھے بیٹھے خواب میں اللہ کے نبی کا دیدار ہوا کہا عطبی جاؤ اس بدو کو خوشخبری دے دو کہ تیری فریادیں پہنچیں اور تیری بخشش ہوگئی ہمارے نبی ﷺ کے معجزات میں ایک معجزہ ہے کہ آپ کی قبر موجود مشہود باقی جتنے انبیاء ہیں ان کی قبریں یقینی نہیں ہیں ابراہیمؑ کی قبر موجود ہے اور کئی انبیاء کی قبریں عراق میں فلسطین میں لیکن یقین سے نہیں کہہ سکتے کہ واقعی یہ ہیں صرف ہمارے حبیب پاک ہیں جن کی قبرِ مبارک یقین کے ساتھ ہے ۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.