”پٹھوں میں کھچاؤ اور کڑل پڑنا۔“

عام طور پر کسی بھی شخص کی پنڈلی کے عضلات میں اکڑ پیدا ہو سکتی ہے

تاہم اکثر و بیشتر اس کا شکار بڑی عمر کے افراد اور کھلاڑی ہوتے ہیں۔ عام طور پر یہ تکلیف زیادہ دیر آرام کرنے یا نہایت سخت جسمانی ورزش کے دوران پیدا ہو جاتی ہے۔ تاہم چند کیسز میں اس کی وجہ سنجیدہ نوعیت کی طبی کیفیت بھی ہو سکتی ہے۔

اگر درد کا یہ دورہ زیادہ دیر تک رہتا ہے اور روز مرہ کے کاموں کو سر انجام دیتے ہوئے مشکلات پیدا کرتا ہے، تو بہتر یہ ہے کہ فوری طور پر ڈاکڑ سے رجوع کیا جائے۔ انہوں نے اس بات کی جانب بھی اشارہ کیا کہ اگرچہ یہ درد نہایت ناگوار ہوتا ہے تاہم یہ مرگی کے دوروں جتنا خطرناک نہیں۔ ماہرین غذا کے مطابق کچھ گھریلو علاج ایسے ہیں۔

جن کے ذریعے پٹھوں کے درد پر کنٹرول کیا جاسکتا ہے خصوصا سردی کے موسم میں یہ علاج مفید ہوتے ہیں۔برطانوی ویب سائٹ ’دی ہیلتھ‘ کے مطابق ماہرین نے اس بات پر زور دیا کہ جسم کو مناسب مقدار میں پانی کی فراہمی ضروری ہوتی ہے کیونکہ پانی کی کمی براہ راست پٹھوں کی کمزوری کا سبب بنتی ہے اور وہ کمزور ہو جاتے ہیں۔

ماہرین گھریلو اشیا میں ان پھلوں کے استعمال کا کا مشورہ دیتے ہیں۔ کیلے میں پوٹاشیم کی موجودگی کی وجہ سے وہ پٹھوں کو لچکدار بناتا ہے، جدید تحقیق کے مطابق پوٹاشیم کی کمی پٹھوں کی کمزوری، تھکاوٹ اور درد کا باعث بنتی ہے۔ سرسوں کا تیل سرسوں کا تیل ایک قدرتی بہترین تحفہ ہے، اس کے استعمال سے خون کی گردش میں اضافہ ہوتا ہے، جس سے پٹھوں کی کمزوری دور ہوتی ہے اور پٹھے فعال ہو جاتے ہیں۔

سرسوں کے چار چمچ تیل میں10 لہسن پیس کر ڈال لیں اس کے بعد اسے آگ پر گرم کرلیں یہاں تک کہ اس کا رنگ بھورا ہوجائے، پھر اسے دن میں کئی بار اس جگہ پر لگائیں جہاں درد ہورہا ہویہ جڑی بوٹی جسم میں سوزش کے خلاف کام کرتی ہے،اس کے ذریعے پٹھوں کو سکون ملتا ہے اور تناؤ کی کیفیت میں کمی ہوتی ہے۔اس کا تیل بنانے کےلیے اس کے پتوں سے نکلنے والےتیل کے دوقطرے مرچ تیل کے دو قطرے ناریل کے ایک چمچ تیل میں ملادیں، پھر اسے درد کی جگہ پر دن میں دو یا تین بار لگائیں۔یہ بھی ممکن ہے۔

کہ اس کے سوکھے ہوئے پتوں کو پانی میں بھگودیں،پھر جسم کے جس عضو میں درد ہواسے 15منٹ تک اس پانی میں بھگوئیں رکھیں،اس عمل کو روزانہ دن میں دو یا تین بار دہرائیں۔کالی مرچ پٹھوں کے علاج کے لیے نہایت مفید ہے،اس سے سوزش اور جلن میں کمی ہوتی ہے۔

کالی مرچ کاایک چمچ زیتون کے تیل کے دو چمچ کو آپس میں ملالیں،پھر جہاں درد ہو وہاں رات بھر مساج کریں،اسے دو یا تین دن تک جاری رکھیں،اسی طرح اس کے ساتھ ناریل کا تیل بھی شامل کرسکتے ہیں۔ماہرین کے مطابق اگر گھریلو علاج سے درد میں افاقہ نہ ہوتو ڈاکٹر سے رجوع کریں،کیونکہ پٹھوں میں درد کی وجوہات مختلف ہوسکتی ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *