گرمیوں کے موسم میں آنکھوں کو خراب ہونے سے کیسے بچائیں

جیسے ہی گرمیاں آتی ہیں۔ اور گرمیوں کی تپش اور گرمیوں کی لو جیسا چلنا شروع ہوتی ہے۔ تو اکثر دیکھا گیا ہے

۔ آنکھیں خراب ہو جاتی ہیں۔ اور گرمیو ں میں آنکھیں خراب ہونے کی وباء عام پھیل جاتی ہے۔ اور اس کے لیے بہت سارے لوگ بے انتہاء فکر مند ہوتے ہیں۔ گرمیوں کے اندر جو آنکھیں خراب ہوتی ہیں۔ اور آنکھوں کے خراب ہونے کی وجہ سے ، آنکھوں میں سرخی کا ہوجانا، آنکھوں سے پانی کا  بہنا، آنکھوں کاسوج جانا، آنکھوں کی نیچے پپوٹوں کا لٹک جانا، ان میں سوئیلنگ کا آجانا، یہ عام سی بات بن چکی ہے۔ او رآج بے شمار لوگ اس بیماری میں مبتلا ہیں۔ سب سےپہلی چیز آنکھوں کی وہ بیماریاں جو گرمیوں میں گرم لو  کی وجہ سے ہوتی ہیں۔ ان سے بچنے کا بہت   ہی آسان طریقہ ہے اگر ہم ایک دن میں پانچ مرتبہ وضو کریں۔ اور اپنی آنکھوں کو فجر کے وقت ، ظہر کے وقت ، عصر کے وقت، مغرب کے وقت اور عشاء کے وقت اور اگر ہم بیمار ہیں۔

تو ضرورت کےلیے آپ حاجت کےوقت ، آپ اشراق کے وقت، چاشت کے وقت، اوابین کے وقت وضو کرسکتے ہیں۔ آپ ٹھنڈے پانی کے  چھینٹیں اپنی آنکھو ں میں ماریں۔ گھر سے نکلتے وقت ٹھنڈے پانی کی چھینٹیں اپنی آنکھوں میں ماریں۔ جو برف کا ٹھنڈا پانی ہے۔ جو گھڑے کا ٹھنڈا پانی ہے ۔اس کو اپنی آنکھوں پر ماریں۔ یہ ٹھنڈ اپانی گرمیوں میں خاص طور پر جو آنکھیں خراب ہوتی ہیں۔ ان کا بہترین علاج ہے۔ اس کےلیے دوائیوں کے چکر میں میڈیسن کے چکر میں ، کیمیکل سے بنے آئی ڈراپس ان کواستعمال کرنےسے پرہیز کریں۔ سب سے بہترین علاج  پانی ہے۔  ہر گھنٹے بعد اپنی آنکھوں کو دھوئیں۔ اور با ہر نکلتے وقت اپنی آنکھوں پر جو اچھے والے سن گلاسز ہیں۔ بلیک کلر  کے وہ استعمال کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ آنکھیں اگر زیادہ خراب ہیں۔ لمبا سجد ہ کریں۔ کیلے کے ساتھ اپنے دانتوں کو رات کو صاف کرکے صبح اٹھ کر ” بسم اللہ ” اور ” سورت الفاتحہ ” پڑھ لیں۔

اور اپنا تھوک  اپنی آنکھوں  کے اندر لگائیں۔ جیسا کہ حضرت علی رضی اللہ عنہ  جب ایک جنگ میں آنکھیں خراب تھیں۔ ان کو آشوب چشم تھا۔ آنکھوں سے پانی بہتا تھا۔ آنکھیں سرخ تھیں۔ تو پیارے پیغمبر جناب محمدﷺ نے اپنا لعاب دہن ” بسم اللہ ” اور” سورت الفاتحہ ” پڑھ کر ان کی آنکھوں میں ڈالا۔ یہ نبی پاک ﷺ کی سنت ہے۔ ہم بھی سورت الفاتحہ پڑھ کر ، کیونکہ سورت الفاتحہ میں شفاء ہے۔ یہ سورت شافع  ہے یہ سورت کافیا ہے۔  یہ بیماریوں سے نجات دینے کی بہترین سورت ہے۔ سورت الفاتحہ پڑھ کر اپنا تھو ک لے کر اپنی آنکھوں کے اندر لگائیں۔ اس کے ساتھ ساتھ اسمت سرمہ جو پیارے پیغمبر ﷺ باقاعدگی کے ساتھ استعمال کرتے تھے۔ اس کا اہتمام کریں۔ اس کےساتھ ساتھ اپنی آنکھوں میں شہد لگائیں ۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ جو خالص گلا ب کا عرق ہے۔ اس سے اپنی آنکھیں دھوئیں۔ کاٹن کے اوپر گلاب کا عرق لگا کر اسے اپنی آنکھوں کی جو گندگی ہے ۔

اس کو صا ف کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ آنکھوں کی خرابی کےلیے جو گرمیوںمیں گرم   لو کی وجہ سے ہوجاتی ہے۔ آپ یہ جوبرف ہے۔ا سکے ساتھ اپنی آنکھوں کو ٹکور دیں۔ اس کے ساتھ ساتھ جب آنکھیں خراب ہوجائیں تو اس کےلیے فکر مند نہیں  ہونا، پریشان  نہیں ہونا۔ اللہ کے حضور سجدے میں گڑ جائیں۔ گڑگڑائیں۔ حضور اکرم ﷺ کو جب کوئی مشکل آتی تھی۔ جو کوئی پریشانی آتی تھی۔ آپ مصلے پر جاتےتھے۔ اپنے رب کے سامنے جھکتے تھے۔ اپنے رب سے باتیں کرتے تھے۔ اپنے رب سے مناجات کرتےتھے۔ دعائیں کرتےتھے۔ التجائیں کرتے تھے۔ ایک آنسو جو اللہ کے ڈرسے، خشیعت سے ، خوف سے جو ہماری آنکھ سے بہہ گیا۔ نہ صرف آنکھوں کے مسئلوں کو ٹھیک کردے گا۔ بلکہ آخرت ، ہماری قب ر، حشر، سقراط کے ، قیامت کے سارے مسئلوں کو ٹھیک کردےگا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.