گرمی ، پسینہ اور پسینے کی بدبو کا آسان گھریلو علاج

پسینہ تقریبا جسم کے تمام حصوں سے نکلتاہے اور خشک ہو جاتا ہے جسم کے کچھ حصے ایسے ہوتے ہیں

جہاں پسینہ جلدی خشک نہیں ہوتا مثلا گردن ،بغلیں اور پوشیدہ اعضاء وغیرہ میں خاص طور پر گرمیوں میں ان حصوں سے پسینہ آسانی سے خشک نہیں ہوتا کیونکہ یہ حصے زیادہ تر کپڑوں میں ڈھکے رہتے ہیں اس لئے جسم سے پسینے کی بدبو آنے لگتی ہے اس بو کو دور کرنے کے لئےنہاتے وقت پانی میں ڈیٹول یا کیوڑہ ملا لیں (ایک یا دو چمچ) یا ہڑیر پیس کر اس سے مالش کر کے نہائیں۔معدنی پھٹکری ایک فائدہ مند چیز ہے، جو کپڑوں پر نشان بھی نہیں چھوڑتی اور بے بو ہوتی ہے۔ یہ جراثیم کش خصوصیات رکھتی ہے جو پسینے کے غدود کو سکیڑنے میں مدد دیتی ہے اور اس سے بو غائب ہوجاتی ہے۔

اسے استعمال کرنے کے لیے پانی میں بھگوئیں اور بغلوں پر پھیرلیں۔نہاتے وقت صابن یا لیکوئیڈ باڈی واش سے جلد کو اچھی طرح سے صاف کریں اور کسی وجہ سے نہا نہیں سکتے تو احتیاط سے بغلوں کو ہینڈ واش سے صاف کرلیں۔ ایسا کرنے سے وہ جراثیم مر جائیں گے جو اس بو کا باعث بنتے ہیں۔بیکنگ سوڈا بھی اس حوالے سے فائدہ مند ہوتا ہے، صبح کو اسے ہلکی نم جلد پر لگائیں اور اضافی سفوف کو صاف کردیں۔ اگر دن بھر میں سورج کی روشنی کے نیچے کافی کام کرنا ہے تو ایک اور نسخہ آزمایا جاسکتا ہے، جس سے پسینے میں کمی لانے میں مدد ملتی ہے۔ 2 چائے کے چمچ بیکنگ پاؤڈر، ایک چائے کا چمچ نمک، ایک چائے کا چمچ چینی اور ایک لیٹر پانی کو مکس کرلیں۔ صبح کے وقت اس کا ایک کپ پی لیں، اگر ایک ساتھ پینا مشکل لگے تو دن بھر میں تھوڑی تھوڑی مقدار میں پی لیں۔جامن کے پتوں کو پانی میں ابال کر ٹھنڈا ہونے کے لئے رکھ لیں جب پانی ٹھنڈا ہو جائے

تو اسے جسم پر مل لیں 5 منٹ کے بعد صاف پانی سے نہا لیں پسینے کی بدبو نہیں آئے گی۔ہائیڈروجن پر آکسائیڈ یہ ایک جراثیم کش محلول ہوتا ہے جو جراثیموں کے خلاف لڑتا ہے اور دن بھر ناگوار بو سے بچانے میں مدد دیتا ہے۔ ایک چائے کا چمچ ہائیڈروجن پرو آکسائیڈ کو آدھا کپ پانی میں ملائیں اور اس مکسچر کو صبح کے وقت بغلوں کو صاف کرنے کے لیے استعمال کریں۔نہانے کے بعد جسم کو تولیئے سے اچھی طرح سے خشک کریں ایسے کپڑے پہنیں جو پسینے کو جلدی جذب کر سکیں۔آلو کے ٹکڑوں کو بھی ان جسمانی حصوں پر رگڑنا فائدہ مند ہے جہاں بو جلد پیدا ہو جاتی ہے۔ جیسے کہ بغل وغیرہ. ایک چائے کے چمچ پھٹکری کا نہانے کے پانی میں اضافہ بھی اس حوالے سے مدد دیتا ہے، اس میں پودینے کے چند پتوں کو پیس کر بھی شامل کریں۔ عرق گلاب کو نہانے کے پانی میں شامل کرنا پسینے سے پیدا ہونے والی بو کو دور کرتا ہے۔ یہ قدرتی طور پر ٹھنڈک پہنچانے میں مددگار اور فطرت کی جانب سے فراہم کردہ پرفیوم ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.