گرمی دانوں کا آسان ٹوٹکا دہی کے پانی میں یہ ملائیں

گرمی دانے کیوں نکلتے ہیں اور ان سے کیسے بچا جاسکتا ہے یہ گرمی دانے شدید چبھن اور خارش کا باعث بنتے ہیں

چھوٹے بچے اور کچن میں کام کرنے والی عورتیں ان سے زیادہ متاثر ہوتی ہیں اصل میں ہوتا یہ ہے کہ موسم گرما میں جب ہوا میں گرمی کا تناسب بڑھتا ہے تو پسینہ زیادہ آتا ہے اگر زیادہ دیر تک گرمی میں رہا جائے اور پسینہ خشک نہ کیا جائے تو پسینہ میں موجود تیزابی مادے اور جسم کی میل سے پسینہ پیدا کرنے والے غدود کا منہ بند ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے گرمی دانے پیدا ہوتے ہیں عام طور پر ان دانوں کا سوائے جلن اور چبھن کے کوئی نقصان نہیں ہوتا لیکن بعض اوقات خارش کرنے سے یہ چھل جاتے ہیں جس سے جراثیموں کو جلد کے اندر داخل ہونے کا موقع مل جاتاہے جس سے دانے پیپ سے بھر جاتے ہیں جو کافی تکلیف کا باعث بن سکتے ہیں۔ گرمی دانوں سے نجات حاصل کرنے کے گھریلو بہت سے ٹوٹکے ہیں ۔پسینہ کو خشک کرنے کیلئے سوتی ، ہلکے رنگ اور ڈھیلے ڈھالے لباس زیب تن کریں۔

ایسے انتظامات کریں کہ پسینہ کم سے کم آئے اور پسینہ کو جلد از جلد خشک کرنے کی کوشش کریں۔خون صاف کرنے والی ادویات مفید ہیں۔گرمی دانوں کا پاؤڈر لگائیں اس پاؤڈر سے ٹھنڈک کا احساس اور پسینہ جلد خشک ہوجاتاہے۔گرمی دانوں کے لئے وٹامن سی کی گولیاں وقتی آرام کے لئے بہترین ہیں ۔پھلوں کے سرکہ میں تھوڑا سا پانی ملاکر گرمی دانوں پر لگانے سے فوری آرام آتاہے۔دن میں ایک سے دو مرتبہ لگائیں۔نبی ﷺ نے سنگترے کو دل کے لئے بہترین قرار دیاہے سنگترے کی قاشوں پر شہد لگاکر کھاناگرمی دانوں کی جلن دور کرنے کے لئے بہترین ہے۔میٹھے انار کا جوس اور تربوز گرمی دانوں سے نجات کے لئے مفید ہیں۔بہت زیادہ تعداد میں نکلے گئے گرمی دانوں کے لئے صعتر فارسی بیس گرام اور سناء مکی پچیس گرام لے کر پانچ سو گرام پانی میں دس منٹ ابال کر چھان لیں اس میں اسی کے برابر سرکہ ملا لیں یہ گرمی دانوں کا لوشن بن جائے گا یہ لوشن دانوں والی جگہ لگائیں بہت فائدہ ہوگا اگر دانوں میں پس پڑ گیا ہوتو بیس گرام مرمکی یا لوبان بھی شامل کرلیں۔

خواتین اپنے ہاتھوں اور پیروں پر مہندی لگائیں اس سے ٹھنڈک کا احساس اور جلن دور ہوگی۔گھر میں گرمی دانوں کا پاؤڈر بنانے کے لئے ایک کپ پسا ہوا رال سفید، پہاڑی پودینہ پسا ہواآدھا کپ ،کافور کی دو گولیاں پسی ہوئی،سب کو اچھی طرح باریک پیس کر چھان کر ایک کپ ٹیلکم پاؤڈر میں ملالیں اور بوتل میں بھر کر رکھ لیں اگرگرمی دانے زیادہ نکلتے ہیں تو رال سفید کی مقدار کو تھوڑا بڑھا لیں۔عناب،نیلوفر کے پھول،خشک دھنیاا ور خربوزے کے بیج ابال کر بلینڈ کرکے پی لیں گرمی دانے نہیں نکلیں گے۔برگِ کاسنی دو چمچ، پھٹکری کا ایک ٹکڑا اور ست کافور کی پوٹلی بناکر نہانے کے پانی میں ڈال کر تھوڑی دیر چھوڑ دیں اسکے بعد نہالیں پانچ سے چھ گھنٹے تک آپ گرمی سے محفوظ رہیں گے۔اس پانی سے نہانے کے بعد آپکو ٹھنڈک کا احساس ہوگا۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *