”لو بلڈ پر یشر کو نارمل کرنے کے آسان گھر یلو ٹوٹکے۔“

بلڈ پریشر کا کم ہونا اتنا خطر ناک نہیں جتنا ہائی بلڈ پریشر مگر اسے نظر

انداز نہیں کیا جا سکتا، اگربلڈ پریشر مسلسل کم ہونے کی شکایت ہے تو مخصوص عادات کو اپنا کر اس پریشانی سے بچا جا سکتا ہے۔ اگر آپ کا بلڈ پریشر اکثر کم رہتا ہے تو یہ پریشانی کی بات ہے ، اس کی کوئی علامات ظاہر نہیں ہو رہی ہیں تو یہ ایک نارمل بات ہے، لو بلڈ پریشر کے ساتھ چکر آنا اور جسم میں درد جیسی شکایات بھی ہیں تو ایسی علامات پریشان کن ثابت ہو سکتی ہیں، یہ علامات اس بات کا ثبوت ہیں کہ خون صحیح طریقے سے جسم کے اعضا ء تک نہیں پہنچ رہا ۔ ایسی صورت میں سب سے پہلے پانی پئیں، پانی آپ کے جسم میں موجود خون کی سطح بڑھا دیتا ہے جس کے نتیجے میں دورانِ خون نارمل ہو جاتا ہے۔

اگر آپ کو مسلسل لو بلڈ پریشر کی شکایت رہتی ہے تو تھوڑا تھوڑا اور وقفے سے کچھ نہ کچھ کھاتے رہیں، ایک ساتھ زیادہ کھانے سے پرہیز کریں اور کھانے پینے کی اوقات میں وقفہ کم رکھیں۔ لو بلڈ پریشر کی علامات محسوس کریں تو تھوڑا نمک چاٹ لیں، نمک ٹماٹر کے ساتھ بھی استعمال کیا جا سکتا ہے، جن افراد کا مسلسل بلڈ پریشر کم رہتا ہو توکھانے میں تھوڑا نمک بڑھا کر کھا سکتے ہیں تاکہ بلڈ پریشر متوازن رہے۔ اگر بیٹھے بیٹھے بلڈ پریشر کم ہونا محسوس ہو تو اسی وقت ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھ جائیں، اس طریقے سے خون کی گردش تیز ہو جاتی ہے ۔

بلڈ پریشر کم ہونے کی صورت میںتیز تیز کام نہ کریں، ایسا کرنے سے سر میں درد سمیت چکر آ سکتے ہیں اور آنکھوں کے آگے اندھیرا چھا جانے سے آپ کسی حادثے کا شکار ہو سکتے ہیں، تیزی سے حرکت کرنے سے دل اچانک خون کی گردش بندکر سکتا ہے جو کسی بڑے نقصان کا سبب بن سکتا ہے۔ اگر سر درد ، چکر ، آنکھوں کے آگے اندھیرا چھا جانا، کچھ سمجھ میں نہ آنا ، سینے میں درد، نظر کا دھندلانا ، پیاس کا بڑ ھ جانا، متلی جیسی علامات ظاہر ہوں تو یہ بلڈ پریشر کم ہونے کی نشانیاں ہیں، ایسے میں گھر میں تھوڑا سا کچھ کھائیں، پانی پئیں اور اپنے معالج سے فوراً رابطہ کریں۔

ھلوں، سبزیوں، اجناس، کم چکنائی والی دودھ کی مصنوعات، چربی کے بغیر گوشت، مچھلی اور گریاں کھانا عادت بنائیں جبکہ زیادہ چربی والے جنک فوڈ، چکنائی والی دودھ کی مصنوعات سے گریز کریں۔ اس کے علاوہ میٹھی اشیا اور مشروبات جیسے سوڈا اور جوش کا استعمال بھی کم کردیں۔غذا میں نمک کی مقدار کو کم از کم رکھنا بلڈ پریشر کی سطح میں کمی لانے کے لیے انتہائی ضروری ہوتا ہے، بہت زیادہ نمک کا استعمال جسم میں سیال کے اجتماع کا باعث بنتا ہے جس کے نتیجے میں بلڈپریشر تیزی سے اوپر جاتا ہے۔ تو ہمیں ان چھوٹی چھوٹی باتوں پر عمل کر نا چاہیے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.