بوڑھا بھی لگائے تو ہرن جیسی دوڑ لگائے

جیسے جیسے وقت گزرتا جارہا ہے پین کلر ادویات کا استعمال بھی بڑھتا ہی

جارہا ہے ان میں کچھ ایسی ادویات بھی شامل ہیں جو روزانہ استعمال کی جاتی ہیں جیسے کہ بروفین یا اسپرین وغیرہ یہ گولیاں ن ش ے کی طرح عادت سی بن جاتی ہے بس ایک گ و ل ی کھاؤ اور فوری آرام پاؤ آرام تو آجاتا ہے لیکن اس کا ہمارے جگر

اور معدے پر بہت برا اثر ہوتا ہے ان کو بکثرت استعمال کرنے سے ہمارے اندرونی اعضاء بھی تباہ ہوجاتے ہیں اور پیٹ بھی خراب ہوجاتا ہے تو کیوں نہ آپ کو ایسی نیچرل ریمیڈی بتا دی جائے جس کا کوئی نقصان بھی نہ ہو اور آپ کے دردوں کا بھی خاتمہ ہو جائے جوڑوں میں آپ کو کہیں بھی درد ہو چاہے کمر کا ہو کندھوں کا ہو کہنی کا یا پھر گھٹنے کا آپ اسے لگائیں گے تو انشاء اللہ فوری آرام پائیں گے بوڑھا ہو یا جوان سب ہی اسے لگاسکتے ہیں یہ ریمیڈی کیسے بنے گی؟سب سے پہلے آپ نے پانی لینا ہے سادہ پانی آپ لے لیں ایک کپ سے تھوڑا کم پانی آپ نے لینا ہے

اب اسے آپ کسی بھی برتن یا باؤل وغیرہ میں ڈال دیں اب آپ نے اس میں آلیو آئل ڈالنا ہے یعنی زیتون کا تیل چاہیں تو آپ ایکسٹرا ورژن آلیو آئل لے لیں یا پھر پومیز آلیو آئل لے لیں یعنی کھانے والا بھی لگا سکتے ہیں یا لگانے والا بھی دونوں استعمال ہو سکتے ہیں ایک کپ آپ نے یہ لینا ہے اب آپ نے لینا ہے سی سالٹ یعنی سمندری نمک آٹھ بڑے والے چمچ آپ اس کے شامل کر لیجئے اب آپ نے اسے اچھی طرح مکس کرنا ہے اب اس ریمیڈی کو آپ نے اپنے متاثر ہ حصے پر لگانا ہے جہاں بھی آپ کو درد ہو آپ اسے لگائیں اور کچھ منٹ تک مساج کریں

شروعات میں پانچ منٹ تک مساج کریں پھر آہستہ آہستہ وقت کو بڑھاتے ہوئے پندرہ منٹ تک لے جائیں اگر آپ کو ایسا لگتا ہو کہ آپ کی سکن حساس ہے اور ریشز پڑ سکتے ہیں تو آپ اسے لگانے سے پہلے گرم پانی میں تولیہ بھگو کر پہلے متاثرہ حصے کی سکائی کرلیں پھر خشک کر کے کوئی بھی بے بی پاؤڈر لگالیں اور پھر اس ریمیڈی کو لگائیں اور پھر کچھ منٹ تک مساج کریں انشاء اللہ اس کے ایک ہی بار کے استعمال سے آپ فرق دیکھیں گے اور مزید اگر آپ اسے استعمال کریں گے

تو درد مکمل طور پر ختم ہوجائے گا۔باہر کھانا کھانے کا رواج عام ہو چکا ہے۔ہر خاص وعام بازار کے کھانوں کا شوقین نظر آتا ہے۔جگہ جگہ فوڈ اسٹریٹ قائم ہو چکی ہیں۔جن میں طرح طرح کے کھانے دستیاب ہوتے ہیں۔ہر ویک اینڈ پر باہر جاکر کھانا کھانا سب سے مقبول تفریح بن چکی ہے۔باہر کے کھانے دیکھتے ہی منہ میں پانی بھر آتا ہے لیکن یہ کس طرح تیار ہوتے ہیں اکثر لوگ اس سے نا واقف ہیں۔جب ہم اپنا کھانا خود تیار کرتے ہیں تو اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ اس میں استعمال ہونے والی ہر چیز صاف ستھری اورخالص ہو۔اس کی تیاری میں کوئی مضر صحت چیز شامل نہ ہو۔جب ہم یہی چیز باہر کھاتے ہیں تو وہ اچھی تو بہت لگتی ہے لیکن اس کے صاف ستھراہونے کی کوئی گارنٹی نہیں ہوتی۔فوڈ اسٹریٹ اور ریستورانوں میں تیار شدہ یہ کھانے صحت کے لئے بہت نقصان دہ ہیں۔جو انسانی جسم کو نقصان پہنچانے کا باعث بنتے ہیں۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.