”ایک دفعہ یہ تسبیح پڑھ کر چار کیل گھر میں ٹھونک دیں“

حضرت سہل بن سعد رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا: میری اُمت کے ستر ہزار یا سات لاکھ افراد (بغیر حساب و عذاب کے) جنت میں داخل ہوں گے، (راوی کو عدد میں سے کسی ایک کا شک ہے) یہ ایک دوسرے کو (نسبت کی وجہ سے باہم) تھامے ہوئے ہوں گے یہاں تک کہ اُن کا پہلا (قیادت کرنے والا) اور آخری شخص جنت میں داخل ہو جائے گا۔ اُن کے چہرے چودہویں رات کے چاند کی طرح چمکتے ہوں گے۔

آج ہم آپ کو جو یہ وظیفہ بتائیں گے اس سے آپ کو اتنے شاندار فوائد حاصل ہوں گے جو بندہ چار کیل لیکر اس پر اللہ کا نام جو آپ کو بتائیں گے پڑھ کر گھر کے چار کونوں پر لگا دیگا اس نام کی برکت سے اللہ تعالیٰ آپ کو غنی کردیگا۔قرآن پاک کے ہر لفظ میں شفاء ہے ۔جب بھی کوئی پریشانی آیا کرے تو آپ قرآن پاک کھول لیا کریں جو آیت سامنے آئے اگر ترجمہ والا ہے

اسے پڑھا کریں او رمطلب اخذ کیا کریں کہ قرآن کیا کہہ رہا ہے مصیبت میں نماز اور قرآن تمہارے ساتھ ہے ۔ اللہ تعالیٰ سے گر گرا کر دعا مانگیں کہ مالک کائنات میرے حالات پر کرم کردے اور مجھے میری منزل مقصود پر پہنچا دے جو پریشانی میں مبتلا ہوں اس سے نکال دے ۔ آپ نے اس وظیفہ میں کرنا یہ ہے کہ یا رزاق ُ یا رحیمُ اس کو تسبیح پر پڑھنا ہے ۔ کیلیں آپ نے سامنے رکھ دینی دو نوافل پڑھ کر جائے نماز پر بیٹھ جانا ہے ۔

ہر کیل پر آپ نے یا رزاق ُ یا رحیمُ کی 100تسبیح کرنی ہے ۔ ہر کیل پر آپ نے یہ عمل کرنا ہے یہ ساری زندگی کا عمل ہے آپ نے یہ کیلیں اپنی گھر کی چاروں طرف کی دیواریں ہیں ٹھونک دینی ہے ۔ اس کو جاری رکھنے کیلئے آپ نے ہر منگل والے دن رات کو فجر کی اذان سے ایک گھنٹہ پہلے اُٹھنا ہے یا رزاق ُ یا رحیمُ دس بار پڑ ھ کر چاروں دیواروں پر پھونک دینا ہے ۔

اس عمل کے کرنے سے انشاء اللہ رب کی بہت نوازشیں ہوں گی ۔حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ میں نے حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو فرماتے ہوئے سنا: میری اُمت کے ستر ہزار افراد کا گروہ (بغیر حساب کے) جنت میں داخل ہو گا جن کے چہرے چودہویں رات کے چاند کی طرح چمکتے ہوں گے۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں: عکاشہ بن محصن نے اپنی اُون کی چادر کو بلند کرتے ہوئے کھڑے ہو کر عرض کیا: یا رسول اﷲ! آپ اللہ تعالیٰ سے دعا کیجئے کہ وہ مجھے اُن میں شامل فرما لے؟ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: اے اللہ! اِس کو اُن میں شامل فرما لے، پھر ایک انصاری شخص نے کھڑے ہو کر عرض کیا: یا رسول اﷲ! آپ اللہ تعالیٰ سے دعا کیجئے کہ مجھے بھی اُن میں شامل کر لے؟ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: عکاشہ تجھ پر سبقت لے گیا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *