ہفتے بعد آپ کے صرف 5 منٹ بس

آ پ کو مختصرسا عمل بتاتے ہیں۔ جو آپ نے ہفتے میں ایک مرتبہ کرنا ہے۔ اور جب آپ ہفتے میں ایک مرتبہ کریں گے۔ جمعہ کی نماز کےبعد کریں گے تو حدیث پاک میں آتا ہے تو اللہ تعالیٰ آپ کے پورے سات دن ہر قسم کی مصیبت سے ، پریشانی سے ، حاسدین کے حسد سے ، شریر لوگوں کے شر سے ، زمینی اور آسمانی آفات اور بلیات سے ، نقصان سے اور حادث

ات سے حفاظت فرمائیں گے ۔ جو کہ بہت ہی مجرب اور آزمودہ عمل او روظیفہ ہے اس سے بڑھ کر اورکیا ہوسکتا ہے ۔ جس کے بارے میں ہمارے پیارے نبی پاک ﷺ کا ارشاد مبارک ہو۔ ہمیں دل وجان سے اس چیز کو قبول کرلینا چاہیے۔ تو یقین کرلینا چاہیے۔تو مختصر شارٹ عمل ہے۔ عمل کیا ہے؟

امام نوی ؒ نے الاذکار فی الصلوۃ الجمعہ کی جلد نمبر ایک اور صفحہ نمبر تین سو میں حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کی ایک روایت ذکر کی ہےوہ ارشاد فرماتی ہیں کہ پیارے آقاجناب محمد رسول اللہ ﷺ نے ارشادفرمایا:جو شخص بھی جمعہ کی نماز کےبعد معوذتین یعنی “سورت اخلاص ، سورت الفلق ، سورت الناس ” ان تینوں سورتوں کو سات سات مرتبہ پڑھے گا۔

اللہ تعالیٰ اس قرآن مجید کی ان تین سورتوں کی برکت سے ایک جمعہ سے دوسرے جمعہ تک ہر قسم کی برائی سے ، نقصان سے ، حادثے سے ، بیماری سے ، تکلیف سے اس کی حفاظت فرمائیں گے۔ کتنا مختصر عمل ہے جمعہ کی نماز پڑھیں۔ آپ ادھر ہی بیٹھ کر سات مرتبہ ” سورت اخلاص” ، سات مرتبہ ” سورت الفلق” او رسات مرتبہ ” سورت الناس” پڑھ لیں۔ اور خواتین ظہر کے وقت کہ جب نماز پڑھتی ہیں۔

تو ا س وقت یہ عمل کرسکتی ہیں۔ اللہ تعالیٰ سے دعا کرتے ہیں۔ اے اللہ! ہماری تمام مسائل اور پریشانیوں کو تو اپنے فضل وکرم سے دور فرما۔ جتنے بھی اس دنیا میں لو گ بیمار ہیں۔ سب کو اللہ تعالیٰ صحت وسلامتی اور شفائےکاملہ عاجلہ مستقلہ عطافرما۔ اے اللہ! جتنے بہن بھائی ہیں۔ ان کی شادی بیاہ نکاح نہیں ہوئے۔ ان کو نیک وصالح برسر روزگار سدا بہار رہنےوالوں

رشتوں میں جوڑ دیں۔ اللہ جن کی اولادیں نہیں ہیں انہیں نیک اور صالح اولاد عطافرما۔ جن کے ذاتی گھر نہیں ہیں۔ انہیں کشادہ اور ذاتی پلاٹ عطافرما۔ یا اللہ ! جو مقروض ہیں ۔ان کے قرضوں کی ادائیگی کے اسباب پیدا فرما۔ یااللہ! ان کی جو ملازمت اور کاروبا ر میں تو خود برکتیں عطافرما کر ان کے قرضو ں کے ادائیگی کے اسباب پیدا فرما۔ یا اللہ! ہماری دعاؤں کو اپنے فضل وکرم سے تو قبول ومنظور فرما۔ آمین۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *